5

پاکستان نے پھیپھڑوں میں کورونا وائرس کی تشخیص کا جدید آلہ تیار کرلیا،ڈریپ نے  میڈیکل ڈیوائس ‘کووریڈ’ کی منظوری دے دی

Hits: 0

پاکستان نے پھیپھڑوں میں کورونا وائرس کی تشخیص کا جدید آلہ تیار کر لیا ہے جس سے پھیپھڑوں میں کورونا انفیکشن کی مقدار معلوم ہو سکے گی۔ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی پاکستان (ڈریپ)نے کورونا کی جدید تشخیصی میڈیکل ڈیوائس ‘کووریڈ’ کی منظوری دے دی ہے۔ڈریپ کے چیف ایگزیکٹو افسر   ڈاکٹر عاصم روف نے ایک بیان میں میڈیکل ڈیوائس رجسٹریشن کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ڈیوائس کو ڈریپ ایکٹ 2012 کے تحت رجسٹرڈ کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ کووریڈ ڈیوائس مکمل طور پر مقامی سطح پر تیار کردہ ہے جو پھیپھڑوں میں کورونا کے انفیکشن کی تشخیص کرے گی۔سی ای او ڈریپ نے کہا کہ کووریڈ سے پھیپھڑوں میں کورونا انفیکشن کی مقدار معلوم ہو سکے گی، میڈیکل ڈیوائس ایک منٹ سے کم وقت میں نتائج دیتی ہے اور اس سے کورونا کے علاج میں نمایاں مدد ملے گی۔ان کا کہنا تھا کہ کووریڈ میڈیکل ڈیوائس دنیا کے چند ممالک کے پاس ہے، پاکستان یہ ٹیکنالوجی دنیا کے دیگر ممالک کو فراہم کرے گا اور یہ ڈیوائس جلد ملک بھر میں دستیاب ہوگی۔انہوں نے کہا کہ کووریڈ ڈیوائس نیشنل الیکٹرانکس کمپلیکس پاکستان کی تیار کردہ ہے جبکہ ڈیوائس کی مقامی سطح پر تیاری بڑی کامیابی ہے۔واضح رہے کہ پاکستان میں وزارت سائنس و ٹیکنالوجی کی جانب سے کورونا وائرس کے پھلاو کے بعد معیاری فیس ماسک اور طبی آلات تیار کیے جارہے ہیں اور کئی ممالک میں انہیں برآمد بھی کیا جارہا ہے۔

@media(min-width: 768px){ .oembed_ltr{ border: 1px solid #e0e0e0!important; width: 90%; padding: 10px 10px 10px 5px!important; display: block; margin: 0 auto; } .oembed_image{ width: 100px; float:right; margin-left: 10px; } .oembed_image .top-center{ height:100px; } .oembed_title{ min-height: 100px; display: block; align-items: center; max-height: 100px; overflow: hidden; } .oembed_title a{ font-size: 20px; line-height: 52px; color:#222; overflow: hidden; padding-right: 10px; } } .top-center { background-position: center top !important; background-size: cover !important; } @media(max-width: 768px){ .oembed_ltr{ border: 1px solid #e0e0e0!important; display: block; align-items: center; width: 100%; padding: 10px 10px 10px 5px!important; } .oembed_image{ width: 90px;float:right;margin-left: 10px; } .oembed_image .top-center{ height: 84px; } .oembed_title{ align-items: center;max-height: 84px;overflow: hidden;min-height: 84px; } .oembed_title a{ font-size: 18px; line-height: 46px; color:#222; overflow: hidden; padding-right: 10px; } }

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں